آپ آف لائن ہیں
جمعرات17؍ذیقعد 1441ھ9؍جولائی2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

جسے ﷲ رکھے، بکنگ سسٹم کی خرابی نے نوجوان کو بچا لیا

لاہور (نمائندہ جنگ)سید مصطفیٰ احمد نے جمعرات کو پی آئی اے کے طیارے پی کے8303 پر سیٹ نمبر 13- اے کنفرم کروانے کیلئے تین بار آن لائن رقم ادا کرنے کی کوشش کی لیکن ہر بار سسٹم کی غلطی نے انہیں بکنگ سے روک دیا۔اس طیارے نے لاہور سے کراچی جانا تھا۔مصطفی احمد کو جمعہ کو شام پانچ بجے سے پہلے کراچی پہنچنا تھا۔

 کورونا وائرس کی وجہ سے ہونیوالے لاک ڈاؤن کے نتیجے میں ٹرانسپورٹ روابط منقطع تھے اور ان حالات میں پی آئی اے کی یہ پرواز ان کیلئے سفر کا بہترین ذریعہ تھی۔ مصطفیٰ احمد نے بتایا کہ میں نے سیٹ نمبر 13- اے کیلئے بکنگ کروائی لیکن جب رقم کی ادائیگی کا مرحلہ آیا تو سسٹم میں خرابی آ گئی۔ 

میں نے تین بار کوشش لیکن آخری مرحلے میں ویب سائٹ نے مجھے ادائیگی اور بکنگ کنفرم کرنے سے روک دیا۔ انہوں نے پریشان ہو کر ایک دوست کو ٹیلیفون کیا، جو کسی دوسری فضائی کمپنی میں کام کرتے تھے اور ان سے مدد مانگی۔مصطفیٰ احمد نے ان سے کہا میں اس پرواز میں جانا چاہتا ہوں اور بکنگ کروانے میں ان سے مدد کیلئے کہا انہوں نے دوبارہ کوشش کی لیکن بکنگ نہ ہو سکی۔ 

کراچی میں ڈیجیٹل مارکیٹنگ سوشل انٹرپرائز ایم مارکینٹ کے مالک مصطفی احمد گلگت میں 90 دن گزار کر لاہور پہنچے تھے۔وہ کورونا وائرس کے دنوں میں بچوں اور جانوروں کیلئے امدادی سرگرمیوں میں حصے لینے گلگت گئے تھے۔ 

مصطفیٰ سرونٹس آف ہیومینیٹی نامی مہم چلاتے ہیں جو ان کے مطابق انہوں نے عبدالستارایدھی کی زندگی سے متاثر ہو کر شروع کی۔مصطفیٰ احمد نے کہا جب میں سیٹ بک کروانے میں ناکام رہا تو ان کے دوست نے کہا کہ میں ان کی کمپنی کی پرواز پر مفت ٹکٹ پر سفر کروں۔

اس پرواز نے جمعرات کو شام چار بجے روانہ ہونا تھا۔

اہم خبریں سے مزید